Introducing solidsIIntroducing solidsIntroducing solidsEnglishNABaby (1-12 months)BodyDigestive systemNAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC8.0000000000000069.00000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Z<p>Find out when to start feeding a baby solid food and how to tell when they are ready to start eating solids. Tips for introducing solids are provided.</p><p>Around six months of age, you can begin to introduce solid foods into your baby's diet. Introducing solid foods before this age can be dangerous for your baby. Start slow and pay attention to the cues your baby is giving you.</p><h2>Key points</h2> <ul><li>Signs your baby is ready for solid foods include the ability to hold their head up when propped to sit, tongue thrust reflex has disappeared and your baby shows interest in food.</li> <li>Introduce new foods one at a time and wait a few days before introducing another one to see if your baby is reacting poorly to the new food.</li> <li>Continue breastfeeding or bottle feeding according to the same schedule your baby was already on.</li></ul>
الابتداء بتقديم الاطعمة الصلبةاالابتداء بتقديم الاطعمة الصلبةIntroducing solidsArabicNABaby (1-12 months)BodyDigestive systemNAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RD;Laura Croxson, RD;Andrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC8.0000000000000069.00000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Z<p>اعرف متى تبدأ في اطعام الطفل الاطعمة الصلبة وكيفية معرفة متى يكون مستعداً للابتداء في تناول الاطعمة الصلبة. نصائح لتقديم الاطعمة الصلبة جرى تزويدها.</p>
让宝宝开始进食固体食物让宝宝开始进食固体食物Introducing solidsChineseSimplifiedNABaby (1-12 months)BodyDigestive systemNAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZaJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RD 69.00000000000008.000000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Z观察何时给宝宝添加辅食以及怎样判断宝宝已经准备好吃辅食?以下关于添加辅食的建议可供参考。
讓寶寶開始進食固體食物讓寶寶開始進食固體食物Introducing SolidsChineseTraditionalNABaby (1-12 months)BodyDigestive systemNAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZaJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RD 69.00000000000008.000000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Z觀察何時給寶寶添加輔食以及怎樣判斷寶寶已經準備好吃輔食?提供了關于添加輔食的若干建議。
Incorporación de alimentos sólidosIIncorporación de alimentos sólidosIntroducing SolidsSpanishNAChild (0-12 years);Teen (13-18 years)NANANAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC69.00000000000008.000000000000000Flat ContentHealth A-Z<p>Sepa cuándo comenzar a darle alimentos sólidos a un bebé y cómo saber cuándo está preparado para comerlos. Se brindan consejos para la incorporación de alime</p>
திடப் பொருட்களை அறிமுகம் செய்தல்திடப் பொருட்களை அறிமுகம் செய்தல்Introducing SolidsTamilNAChild (0-12 years);Teen (13-18 years)NANANAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC000Flat ContentHealth A-Z<p>குழந்தைக்கு எப்போது திட உணவை ஆரம்பிக்கவேண்டும் மற்றும் அவன் திட உணவுக்கு தயாராகிவிட்டான் என்பதை அறிந்துகொள்ளுங்கள்.</p>
ٹھوس غذاؤں کا متعارف کراناٹٹھوس غذاؤں کا متعارف کراناIntroducing SolidsUrduNAChild (0-12 years);Teen (13-18 years)NANANAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC69.00000000000008.000000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Zبچے کو ٹھوس غذا شروع کرنے اور کیسے معلوم ہو کہ آپ کا بچہ ٹھوس غذائیں کھانے کے لئے تیا ر ہے ، اس کے بارے میں جانیں۔ ٹھوس غذائیں متعارف کرانے کے بارے میں اشارات فراہم کئے جاتے ہیں۔
Introduire des aliments solidesIIntroduire des aliments solidesIntroducing solidsFrenchNABaby (1-12 months)BodyDigestive systemNAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC8.0000000000000069.00000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Z<p>Quand commencer à introduire des aliments solides dans l'alimentation de votre bébé et comment déterminer s’il est prêt. On y fournit des conseils sur l’introduction d’aliments solides. </p><p>Autour de l’âge de six mois, vous pouvez commencer à introduire les aliments solides à l’alimentation de votre bébé. Introduire les aliments solides avant cet âge peut être dangereux pour votre bébé. Commencez lentement en portant attention aux signes que votre bébé vous donne.</p><h2>À retenir</h2> <ul><li>Si votre bébé tient sa tête vers le haut lorsqu’on l’assoit, qu’il a perdu son réflexe d’extrusion et qu’il démontre de l’intérêt pour la nourriture, il est alors probablement prêt à ingérer des aliments solides.</li> <li>Introduisez les nouveaux aliments un à la fois et attendez quelques jours avant d’introduire un autre aliment afin d’observer si votre bébé réagit mal aux nouveaux aliments.</li> <li>Continuez à allaiter ou à donner le biberon selon le même horaire suivi jusqu’à maintenant. </li></ul>

 

 

ٹھوس غذاؤں کا متعارف کرانا497.000000000000ٹھوس غذاؤں کا متعارف کراناIntroducing SolidsٹUrduNAChild (0-12 years);Teen (13-18 years)NANANAAdult (19+)NA2009-10-18T04:00:00ZJoan Brennan-Donnan BASc, RDLaura Croxson, RDAndrew James, MBChB, MBI, FRACP, FRCPC69.00000000000008.000000000000001109.00000000000Flat ContentHealth A-Zبچے کو ٹھوس غذا شروع کرنے اور کیسے معلوم ہو کہ آپ کا بچہ ٹھوس غذائیں کھانے کے لئے تیا ر ہے ، اس کے بارے میں جانیں۔ ٹھوس غذائیں متعارف کرانے کے بارے میں اشارات فراہم کئے جاتے ہیں۔<h2>ٹھوس غذا کب سے شروع کی جائے</h2> <p>بیشتر والدین حیران ہوتے ہیں کہ اُن کے بےبی کو ٹھوس غذا شروع کرنے کا کون سا صحیح وقت ہے۔ اُنہیں دیگر والدین سے مشورہ مل سکتا ہے کہ وہ بچے کو جلد شروع کرائیں تاکہ اُن کے بےبی کو رات بھر سونےمیں مدد ملے۔ دادا دادی اُن کو کہہ سکتے ہیں کہ اتنی جلد کہ ایک ماہ میں شروع کرائیں اس لئے کہ اُنہوں نے اپنے بچوں کے ساتھ ماضی میں اسی طرح کیا۔ البتہ جیسا کہ بہت جلد ٹھوس غذاؤں کا متعارف کرانا عام طور پر نقصان دہ تصور نہیں کیا جاتا، طبّی تحقیق سے یہ بات واضح ہوتی ہےکہ بےبی کا بدن چھ ماہ تک ٹھوس غذائیں لینے کو تیار نہیں ہوتا۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق " پہلے چھ ماہ کے لئے مطلق ماں کا دودھ شیر خوار بچوں کی خوراک کے طریق کے لحاظ سےانتہائی موافق ہے۔ اس کے بعد شیر خوار بچے تکمیلی خوراک لیں مع دو سال تک یا زائد ماں کا دودھ پینے کے۔"</p><p>چھ ماہ سے پہلے آپ کے بچے کا نظام ہضم اتنا پختہ نہیں ہوتا کہ ٹھوس غذائیں ہضم کر سکے۔ آپ کے بچے کی زبان کوئی بھی خارجی چیز باہر نکال دے گی جیسے کہ کھانا ؛ یہ زبان کی اضطراری حرکت کہلاتی ہے، اور یہ چھوٹےبچوں کو خارجی چیزوں سے گلا گھٹنے سے محفوظ کرتا ہے۔ آنتوں میں اہم اینزائیمز جو ہضم کرنے کے لئے ضروری ہیں، کی کمی ہو تی ہے۔ کچھ کھانے نظام ہضم کے لئے سنبھالنا مشکل ہوتے ہیں ؛ چھ ماہ سے پہلے ٹھوس غذاؤں کا دینا، کھانے سے الرجیزکے خطرے کو بڑھاتا ہے اور عدم برداشت کا باعث بھی ہوتا ہے۔ نیز اپنے بچے کو چھ ماہ سے پہلے ٹھوس غذاؤں کا شروع کرانا، بچے کو ماں کے دودھ کی کمی اوربچےکو کم دودھ کے ملنے کا باعث ہوتا ہے۔</p><p>اگر آپ اپنے بچے کو ٹھوس غذادیتے ہیں قبل اس کےکہ وہ اس کے لئے تیار ہو وہ کھانے کو ٹھکرا دے گا اور یہ آئندہ کھانوں کے وقت کے لئے کوشش کا مرحلہ قائم کر دے گا۔ نیز اگر آپ کے خاندان میں کھانوں سے الرجیز کا مضبوط پس منظر ہے تو بچے کو ٹھوس غذا شروع کرنے سے پہلے اس کے چھ ماہ کی عمر کا ہونےتک انتظار کرنا بہتر خیال ہوگا۔</p><p>ٹھوس غذا کے شروع کرانے میں زیادہ وقت نہ لیں ، چھ ماہ سے زائد عمر کے بچے اپنے طریق پر زیادہ قائم اور کم لوچدار ہوتے ہیں ۔ اس لئے وہ نئے ذائقے اور ٹھوس غذاؤں کی ساخت کو قبول کرنے پر رضامند نہیں ہوتے۔ وہ اس عمر میں ٹھوس غذا کو چبانے اور نگلنے کو سیکھنے میں مزاحمت کر سکتے ہیں۔ اس وقت اس کی کوئی اچھی شہادت نہیں کہ ٹھوس غذا دینے میں چھ ماہ سے زائد تاخیر کرنا، آپ کے بچے کو کھانوں کی الرجیز، دمہ، یا ایگزیما سے محفوظ رکھ سکتا ہے۔</p><p>یہاں چند ایک اشارے دیے جاتے ہیں کہ کب آپ کا بچہ ٹھوس غذائیں کھانے کے لئے تیار ہوگا :</p><ul><li>جب اُسے بٹھایا جائے گا تو اپنا سر اچھی طرح اوپر اُٹھا لے گا۔ سخت کھانے اس وقت دیے جا سکتے ہیں۔ ایسے بچے جو اپنا سر پوری طرح نہیں اُٹھا سکتے اُنہیں سخت ٹھوس کھانے نہ دیں۔ نیز اگر آپ کا بےبی اونچی کرسی پر بیٹھ نہیں سکتا حتیٰ کہ اگر تکیے اور کمبل سے ٹیک بھی دی جائے، آپ پر لازم ہو سکتا ہے اسے ٹھوس کھانے دینا کچھ وقت تک ملتوی کردیں۔ جب آپ کا بچہ خود بخود بیٹھنے لگے، عام طور پر سات ماہ میں، تو آپ اُسے مزید بڑے ٹکڑے والا کھانا دینا شروع کر سکتے ہیں۔</li><li>زبان کے باہرکو پھینکنے کا عمل ختم ہو گیا۔ تھوڑی مقدار میں چاول کا سیریل، فارمولا دودھ یا ماں کے دودھ میں ملا کر بچے کے منہ میں رکھنے کی کوشش کریں۔ اگر باوجود کئی کوششوں کے آپ کے بچے کی زبان کھانے کو باہر نکالتی ہے، اس کا مطلب ہے کہ زبان کا باہر کو اگلنا ابھی برقرار ہے، اور آپ کو چاہئے کہ ٹھوس غذائیں دینے کے لئے مزید انتظار کریں۔</li><li>آپ کا بچہ اپنی زبان کو استعمال کرتے ہوئے کھانے کو آگے اور پیچھے حرکت دینے کے قابل ہو گیا ہے۔ شروع میں اس مشق میں تھوڑا وقت لگے گا ۔</li><li>آپ کا بچہ نیچے کا ہونٹ نکالے گا اور اس عمل کو چمچ سے کھانا لینے کے لۓ استعمال کرے گا۔ </li><li>آپ کا بچہ کھانے میں دلچسپی ظاہر کرتا ہے۔ وہ آپ کا کانٹا پکڑ سکتا ہے، آپ کی روٹی لے سکتا ہے، آپ کے کھانے کی طرف اشارہ کر سکتا ہے، یا جب بھی آپ نوالہ لیتے ہو تو آپ کو غور سے دیکھ سکتا ہے۔</li></ul><h2>ٹھوس غذا کا تعارف کرانا</h2><p>بچے کی پہلی خواراک ایک یادگاری موقع ہے  لیکن اونچی کرسی کو چلانے اور وڈیو کیمرہ تیار کرنے سے مزید کچھ بھی ہے۔ اگر آپ سمجھتے ہیں کہ یہ موقع خوشی اور تفریح کے قابل ہے، تو آپ کو پہلے کھانے کے لئے وقت اور ماحول کے مقرر کرنے پر غور کرنا ضروری ہوگا۔ </p><h3>وقت ہی ہر چیز ہے</h3><p>سب سے پہلے اس بات کا دھیان رکھیں کہ ٹھوس غذا کھلانے کے پہلے چند ماہ حقیقتاً ایسا وقت ہے کہ اپنے بچے کو ذائقے اور ٹھوس غذا کی ساخت کو قبول کرنے پر عمل پیرا ہوں۔ یہ بات اتنی اہم نہیں کہ آپ کا بچہ خوراک کی کتنی مقدار لیتاہے جب تک کہ وہ ساتھ کے ساتھ ماں کا یا بوتل کا دودھ پیتا ہے۔ حقیقت میں پہلی چند خوراکیں صرف ایک یا زیادہ سے زیادہ دو چائے کے چمچ کے برابر ہوں گی۔</p><p>اس وقت کا انتخاب کریں جب آپ کا بچہ خوش اور چوکس ہے، اورچڑچڑا یا زیادہ تھکا ہوا نہیں ہے۔ کھانا کھلانے میں بہت وقت لگتا ہے اس لۓ یقین کریں کہ جب آپ گھر کے دوسرے کاموں میں مصروف ہوں وہ وقت مقرر نہ کریں۔ اگر دن کے دوران ایک وقت ہے جب کہ آپ کا بچہ بھوکا ہے، تو آپ کو اُس وقت اُسے کھانا دینے کی ضرورت ہوسکتی ہے۔</p><h3>آغاز کرنا </h3><p>اسے تھوڑا سا فارمولا یا ماں کا دودھ دینے سے آغاز کریں تا کہ اس کی بھوک بڑھے اور وہ اپنے نئے تجربے میں بے صبرا پن ظاہر نہ کرے۔ اُسے بہت زیادہ فارمولا یا ماں کا دودھ نہ دیں، اگرچہ وہ اس کی بھوک ختم کر دے گا۔</p><p>اپنے بچے کو چوتھائی چاۓ کا چمچ کھانا دیں۔ چمچ اس کے ہونٹوں پر رکھیں اور دیکھیں کہ وہ کیا ردّ عمل ظاہر کرتا ہے۔ آپ کا بچہ مزید کھانے کے لئے منہ کھول سکتا ہے، اس صورت میں آپ اگلا لقمہ اس کے منہ کے اندر تک ڈال سکتے ہیں تاکہ اُسے نگلنےمیں آسانی ہو۔ دوسرے جانب کھانا اسی وقت سرکتا ہوا واپس بھی آ سکتا ہے۔ اگر یہ بار بار ہوتا ہے پہلے چند کھانوں کے دوران تو اس بات پر غور کریں کہ آپ کا بچہ ٹھوس غذا کھانے کے لئے ابھی تیا ر نہیں ہے۔ ایک آدھ ہفتہ بعد پھر کوشش کریں۔ اگر آپ کا بچہ ٹھوس غذاؤں کے لئے تیار ہے، تو وہ اگلنے کی نسبت زیادہ اندر لے جائے گا۔</p><p>پہلے چند دنوں میں دن میں ایک مرتبہ ٹھوس غذا دینا شروع کریں ۔ جب آپ کا بچہ اس میں ماہر ہو جائے، تو دوسرا کھانا متعارف کرانے کی کوشش کریں اور کچھ دنوں میں،روزانہ تیسرا کھانا ۔</p><h3>کب کھانا روک دیں</h3><p>اگر آپ کا بچہ ضدّی ہورہا ہے ، اپنا سرپھیر لیتا ہے، اپنے منہ کو بھینچ لیتا ہے، کھانا اگلتا ہے یا کھانا ارد گرد گراتا ہے، تو وہ آپ کو اشارہ دے رہا ہے کہ وہ اب بھوکا نہیں۔ اس وقت اس کو کھلانا بند کردیں اور اُسے کھانا جاری رکھنے کے لئے مجبور نہ کریں۔</p><h2>وہ کھانے جن سے آغاز کیا جائے</h2><p>چھ ماہ کی عمر کے لگ بھگ، اپنے بچے کے کھانے میں مندرجہ ذیل کھانوں کےمجموعے، ایک کھانا ایک مرتبہ دیں:</p><ul><li> فولاد ملا بےبی سیریل جو چاول، جو یا جو کی قسموں میں سے ہوتا ہے۔ سیریل چھوٹے چھلکوں کی صورت میں ملے گا اور آپ اسے ماں کے دودھ یا فارمولا میں ملا سکتے ہیں۔ ایک چائے کے چمچ سے اسے دینے کی کوشش کر سکتے ہیں </li><li> بکرے کے گوشت اور مرغی کا گودا </li><li> کچلی ہوئی ،انڈے کی سخت زردی </li><li> اچھی طرح پکی ہوئی پھلیاں، دالیں ، اورکابلی چنے </li><li> سبزیوں کا گودا جیسے مٹر، حلوہ کدّو، شکر قندیاں ،گاجریں، گوبھی، بروکلی یا سبز پھلیاں۔ قبل اس کے کہ آپ کا بچہ میٹھے پھل کے ذائقے کا عادی ہو اُسے سبزیوں سے متعارف کرانا عقلمندی ہوگی۔ بچے سبز سبزیاں جیسے بروکلی یا سبز پھلیوں کی نسبت پیلی سبزیاں پسند کرنے کی طرف زیادہ مائل ہوتے ہیں جیسے کہ حلوہ کدّو اور شکر قندی۔ سبزیوں کا تازہ ہونا لازم نہیں؛ وہ کچلی ہوئی فریز کی ہوئی یا ڈبے میں بند بھی ہو سکتی ہیں، اپنے بچے کے لئے سبزی تیار کرتے وقت، نمک اور مکھن کے ڈالنے کی ترغیب سے رُکیں۔ </li><li> جب آپ کے بچے نے سبزیوں کو اپنی خوراک میں لینا قبول کر لیا ہو تو اس کے بعد پھل . اچھی طرح کچلا ہوا یا سخت کیلا ایک بہترین انتخاب ہوگا، جیسے کہ سیب کی چٹنی۔ اس دوران، بچے کو پھلوں سے ملا ہوا سیریل بھی شروع کر سکتے ہیں۔</li></ul><p>ایک ایک کرکے نئے کھانے متعارف کرائیں۔ نیا کھانا متعارف کرانے میں کچھ وقت لیں اور ناموافق ردّعمل کا جائزہ لیں جیسے اسہال، قےیا سرخ نشان۔ اگر آپ کےبچے کو مسئلہ ہے، ۔ تو آپکو یہ جاننے میں مدد ملے گی کہ کونسے کھانے اسکی وجہ ہیں۔ </p><h2>ماں کا یا بوتل کا دودھ پلا تے رہیں</h2><p>جب آپ اپنے بچے کو ٹھوس غذائیں کھلانا شروع کرتے ہیں، تو حسب معمول ماں یا بوتل کا دودھ پلانا جاری رکھیں۔ ماں کا دودھ اُسی ترتیب کے مطابق دیتے رہیں جیسے کہ وہ پہلے پیتا تھا۔ وقت کے ساتھ ساتھ، جیسے جیسے آپ کا بچہ مزید ٹھوس غذائیں کھانا شروع کرتا ہے، آپ کے پستان کے دودھ کی رسد بتدریج کم ہو جائے گی۔ یہ قدرت کا آپ کے بچے کو دودھ چھڑانے کا طریق ہے۔ اگر آپ بوتل کا دودھ دیتے ہیں، تو اس بات کا دھیان رکھیں کہ وہ کم از کم 480 ملی لیٹر [16 اونس] فارمولا دودھ ہر روز لیتا ہے جب تک کہ وہ ایک سال کا ہو۔</p>​https://assets.aboutkidshealth.ca/AKHAssets/introducing_solids.jpgٹھوس غذاؤں کا متعارف کرانا

Thank you to our sponsors

AboutKidsHealth is proud to partner with the following sponsors as they support our mission to improve the health and wellbeing of children in Canada and around the world by making accessible health care information available via the internet.